اپنا دیشتازہ ترین خبریں

حصار کورٹ کا بڑا فیصلہ: قتل کے دو معاملات میں رامپال کو قصوروار قرار دیا گیا

حصار کے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ڈی آر چالیا نے ستلوک آشرم بروالا کے منتظم رامپال کو نومبر 2014 میں آشرم میں پانچ خواتین اور ایک بچے کی موت کے دو معاملات میں آج قصوروار قرار دے دیا ہے۔

حصار کی سنٹرل جیل ۔1میں لگی خصوصی عدالت میں کیس نمبر 429 میں 4 خواتین اور ایک بچے کی موت کے معاملے میں رامپال سمیت 15ملزمین اور کیس نمبر 430 میں ایک خاتون کی موت کے معاملے میں رامپال سمیت 14ملزمین کو قصوروار قرار دیا گیا ۔ رامپال کو حصار کی سنٹرل جیل ۔2 سنٹرل جیل ۔1میں لاکر خصوصی عدالت میں پیش کیا گیا جس میں فیصلہ سناتے ہوئے جج ڈی آر چالیا نے دونوں ہی معاملات میں رامپال سمیت تمام ملزمین کو قصوروار قرار دے دیا۔ سزا 16اور 17اکتوبر کو سنائی جائے گی۔ پولیس نے ان اموات کے معاملے میں رامپال اور ان کے حامیوں پر قتل کے دو معاملات درج کئے تھے۔

آپکی جانکاری کے لئے بتا دیں کہ رامپال پر قتل کے دونوں معاملے نومبر 2014 کے ہیں. پہلا معاملہ بروالہ کے ساتھلوک آشرم میں 18 نومبر 2014 میں خواتین کے قتل سے جڑا ہوا ہے. جبکہ دوسرا معاملہ حصار کے بروالہ ٹاؤن کے ساتھلوک آشرم 19 نومبر 2014 کا ہے جب چار خواتین اور ایک بچے کی لاش ملنے کے بعد رامپال اور ان کے ا 27 پیروکاروں کے خلاف قتل اور قیدی بنانے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا.

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close