تازہ ترین خبریںدلی نامہ

حج پروازوں کا ٹینڈر بن گیا ایئر انڈیا کے گلے کی ہڈّی

سعودی عربیہ ایئر لائنس سے سستا حج کا کرایا کرنے کے چکر میں پھنسی ایئر انڈیا، کم ریٹ پر عازمین کو لے جانے سے سعودی ایئر لائنس کا انکار، مرکزی وزارت شہری ہوابازی نے سعودی متعلقہ وزارت کو لکھا مکتوب

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
حج مشن 2019 کا آغاز ہو گیا ہے۔ ہندوستان کے مختلف 21 امبارکیشن پوائنٹس سے حج پر جانے والے عازمین کا ہوائی کرایا سستا کرنے کے چکر میں خود ہندوستانی ہوائی کمپنی ایئر انڈیا پھنس گئی جس میں سستا ٹینڈر کرنا اس کے گلے کی ہڈی بن گیا ہے۔ کیوں کہ ایئر انڈیا کے ساتھ ہندوستانی حاجیوں کو سفر حج پر لے جانے والی ایئر لائنس کمپنی سعودی عربیہ ایئر لائنس کی جانب سے کم ریٹ میں حاجیوں کو لے جانے سے انکار کرنے کی بھی خبر ہے۔ اطلاع کے مطابق حج پروازوں (چارٹر فلائٹوں) کا ٹینڈر اس مرتبہ ایئر انڈیا نے سعودی عربیہ ایئر لائنس سے بھی کم ریٹ میں ڈالا ہے۔ جس سے عازمین کو 15فیصد تک کرایا کم ہونے کے امکانات ہیں۔ لیکن باوثوق ذرائع کی اطلاع کے مطابق سعودی ایئر لائنس نے گزشتہ سال سے بھی سستے ہوائی کرا ئے پر ہندوستانی عازمین کو لے جانے سے انکار کر دیا ہے۔ کم ریٹ میں کام کرنے کے سعودی ایئر لائنس کے انکارکے بعد ہندوستانی مرکزی وزارت شہری ہوا بازی نے سعودی عرب کی وزارت ہوا بازی کو مکتوب بھیج کر سعودی ایئر لائنس کو منانے کو کہا ہے۔ لیکن سعودی عربیہ ایئر لائنس کم ریٹ میں کام کرنے کو تیار نہیں ہے۔ جس سے ایک لاکھ 75ہزار عازمین کو لانے لیجانے کی ذمہ داری ایئر انڈیا کے اوپر آرہی ہے۔ یہ کہا جائے تو غلط نہ ہو گا کہ حج کا کرایا سستا کرنے یا کسی اور وجہ سے حج پروازوں کا سستا ٹینڈر کرکے ایئر انڈیا بری پھنس گئی ہے۔ کیوں کہ ہندوستان مختلف 21 امبارکیشن سے حج پر جانے رو انہ ہونے والے ایک لاکھ 75ہزار 25حاجیوں کو لانے لیجانے کےلئے نہ تو ایئر انڈیا کے پاس اتنے جہاز ہیں اور نہ اتنا اسٹاف ہے۔ جبکہ حج کوٹے میں ہوئے اضافے کے بعد اب تقریباً ایک لاکھ 95ہزار سے زیادہ عازمین ملک کے مختلف امبارکیشن پوائنٹس سے حج پر جانے کے امکانات ہیں۔ جس سے ہوائی کمپنی پر مزید بار پڑے گا۔ سعودی عربیہ ایئر لائنس سے کم ریٹ میںایئر انڈیا کی جانب سے ٹینڈر دالے جا نے کی تصدیق حج کمیٹی آف انڈیا کے ممبر ڈاکٹر افتخار جاوید نے بھی اپنے ایک بیان میں بھی کی ہے۔ انہوں نے ساتھ ہی یہ بھی کہا ہے کہ ٹینڈر کا عمل کئی مرحلوں میں مکمل ہوتا ہے، ابھی ٹینڈر کا عمل چل رہا ہے، اگر ایئر انڈیا کو ٹینڈر ملتا ہے تو ہوائی کرایا 15فیصد کم ہو نے کی امید ہے۔

ہوائی کمپنیوں کی جانب سے حج چارٹر پرواز کے مختلف امبارکیشن پوائنٹس کے مختلف کرایا ہوتا ہے۔ دہلی امبارکیشن سے حج چارٹر پرواز کے کرائے کی بات کریں تو سعودی عربیہ ایئر لائنس نے اس سال تقرباً ایک ہزار ڈالر کا ریٹ دیا ہے جبکہ ایئر انڈیا نے اس سال 810 ڈالڑ کا ریٹ دیا ہے۔ گزشتہ سال سعودی ایئر لائنس نے 870 ڈالر کا ریٹ دیا تھا اور ایئر انڈیا نے 1100 ڈالر کا ریٹ دیا تھا، وہیں فلائی ناس نے 875 ڈالر کا ریٹ دیا تھا، جس سے دہلی کی حج پروازوں کا ٹینڈر سعودی ایئرلائنس کو ملا تھا۔ اس طرح ایئر انڈیا کے ریٹ سعودی عربیہ ایئر لائنس کے مقابلے اس سال تقرباً 190 ڈالر کم ہے۔

سعودی ایئر لائنس اور ایئر انڈیا کے 10سالہ معاہدہ کے مطابق ہندوستان سے روانہ ہونے والے کل عازمین میں 50فیصد عازمین سعودی عربیہ کی ہوائی کمپنی کے جہازوں میں جائیں گے جبکہ 50فیصد ہندوستانی ہوائی کمپنی کے جہاز میں جائیں گے اور یہی پروازیں ان کو وطن واپس لائیں گی۔ حالانکہ یہ دس سالہ معاہدہ 2019میں ختم ہو رہا ہے اس لئے بھی تمام حاجیوں کو لانے لیجانے کی ذمہ داری ایئر انڈیا پر آتی ہے۔ لیکن ایئر انڈیا پر نہ تو اتنی پروازیں ہیں اور اور نہ اتنا زیادہ اسٹاف ہے کہ وہ ملک کے 21 امبارکیشن پوائنٹس پر لگا سکے۔ یا پھر ایک بار پھر سے ٹینڈر کئے جا سکتے ہیں کیوں کہ جس طرح حج کوٹا تقسیم نہ ہونے اور 8جنوری سے 17جنوری تک حج قرعہ اندازی چلنے کی صورت میں 16جنوری کو ہونے والا ٹینڈر کو ’ری لوکیشن‘ بتا کر 21 جنوری کو کیا گیا تھا، اسی طرح اب تقرباً 20 ہزار کا حج کوٹہ بڑھنے کی صورت میں یہ کوٹہ تقسیم کرنے کےلئے ریلوکیشن کرکے دو بارہ تقرباً 2لاکھ عازمین کےلئے ٹینڈر کیا جا سکتا ہے۔

۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close