تازہ ترین خبریںدلی نامہ

جے این یو تشدد: نقاب پہنے حملہ آور لڑکی کی ہوئی شناخت، دہلی پولیس جلد بھیجے گی نوٹس

جے این یو میں 5 جنوری کو نقاب پہن کر حملہ کرنے والی لڑکی کی پولیس نے شناخت کر لی ہے، پولیس کے مطابق وہ لڑکی دہلی یونیورسٹی کی طالبہ ہے، پولیس نے کہا ہے کہ جلد ہی اس لڑکی کو نوٹس جاری کیا جائے گا۔ یاد رہے کہ دہلی پولیس نے اس معاملہ میں 9 ملزم طلبہ کی نشاندہی کی ہے اور انھیں پوچھ گچھ کے لئے طلب کیا ہے۔ ملزمین میں جے این یو طلبہ یونین کی صدر آئیشی گھوش بھی شامل ہیں۔

جے این یو تشدد سے وابستہ ویڈیو میں نقاب پوش لڑکی نظر آنے کے بعد تنازع مزید بڑھ گیا تھا۔ میڈیا میں اس کے ای بی وی پی سے ساتھ وابستہ ہونے کا دعوی کیا جارہا ہے، لیکن پولیس نے ابھی تک اس بات کی تصدیق نہیں کی ہے کہ دہلی یونیورسٹی کی اس طالبہ کا کس طلبہ تنظیم کے ساتھ تعلق ہے۔ خیال رہے کہ جے این یو تشدد کے سلسلہ میں بائیں بازو کی طلبہ تنظیموں اور اے بی وی پی کے درمیان الزام تراشیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ دونوں ایک دوسرے پر تشدد کو بھڑکانے کا الزام لگا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ میں نقاب پوش لوگوں کے حملے کئی طلبہ زخمی ہوگئے تھے۔ ساتھ ہی ساتھ پولیس کے رول پر بھی سوالات اٹھے تھے۔ اس واقعہ کے بعد سے ہی یونیورسٹی کیمپس میں مسلسل احتجاج ہو رہا ہے۔ جس کے بعد حالات مزید کشیدہ ہوتے دیکھ جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے انتظامیہ نے ٹیچروں سے کیمپس میں حالات معمول پر لانے اور اکاڈمک سرگرمیوں کو شروع کرنے اپیل کی ہے۔

جے این یو کے رجسٹرار پرمود کمار نے پیر کو کہا کہ جواہر لال نہرو یونیورسٹی ٹیچرس یونین (جےاین یو ٹی اے)کے دو عہدے داروں نے یونیورسٹی میں انتظامیہ کے ساتھ تعاون نہ کرنے کا علان کیا ہے۔ جے این یو ٹی اے نے اپنی عام میٹنگ میں ایک تجویز پاس کرکے اس کی حمایت کی ہے۔ انتظامیہ نے 10جنوری کو دو سرکولر جاری کئےتھے جن میں ٹیچروں سے طلبہ کے رجسٹریشن کے وقت دفتر میں رہنے اور کلاس شروع کرنے کی اپیل کی گئی تھی تاکہ کیمپس میں ماحول معمول پر آجائے اور اکاڈمک سرگرمیاں پھر سے شروع ہوسکیں۔ لیکن ٹیچرس یونین نے اپنی عام میٹنگ میں تعاون نہ کرنے کا اعلان کیا۔

انتظامیہ نے کہا ہے کہ ہزاروں کی تعداد میں طلبہ نے ونٹر سمسٹر کےلئے رجسٹریشن کیا ہے۔ ان کا یہ بنیادی حق ہے کہ وہ کیمپس میں پڑھیں لیکن ٹیچرس ان کے حقوق کی خلاف ورزی کررہے ہیں جو ان کی سروس کی شرطوں کے خلاف ہے۔ انتظامیہ نے ٹیچروں سے اپیل کی ہے کہ وہ کام پر لوٹیں اور حالات کو معمول پر لانے میں مدد کریں۔ اس دوران جے این یو انتظامیہ نے سمسٹر کےلئے رجسٹرین کی تاریخ کو آگے بڑھاکر 12 سے 15جنوری کردی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close