اترپردیشتازہ ترین خبریں

جی آر پی انسپکٹر کی غنڈہ گردی: پہلے صحافی کو جم کر پیٹا، پھر منھ میں کیا پیشاب

اترپردیش کے ضلع شاملی میں گورنمنٹ ریلوے پولیس(جی آر پی )کی ایک ٹیم نے کچھ مقامی میڈیا اہلکار پر اس وقت حملہ کردیا جب وہ منگل کی شام شاملی اسٹیشن کے قریب پٹری سے اتری مال گاڑی کی رپورٹنگ کے لئے اسٹیشن گئے ہوئےتھے۔

اطلاعات کے مطابق شراب کے نشے میں دھت جی آر پی اہلکار نے پہلے ایک ہندی نیوز چینل کے رپورٹر امت شرما کو بری طرح سے زدوکوب کیا اور اس کے بعد انہیں کمرے میں قید کرکے ان کی بے رحمی سے پٹائی کی۔ متاثرہ رپورٹ کے مطابق سادہ لباس میں ملبوس جی آر پی جوانوں نے پہلے اس کے کیمرے کو توڑ دیا اور اس کے بعد اس کی پٹائی کی۔ رپورٹر کے دعوے کے مطابق ’’جب میں نے کیمرے کو اٹھایا تو انہوں نے مجھے پیٹا اور گالیاں دیں۔ مجھے انہوں نے قید کردیا تھا۔ انہوں نے میرے کپڑے اتار دیئے اور میرے منھ میں پیشاب بھی کیا‘‘۔

میڈیا نمائندے کے ساتھ کئے گئے اس غیر انسانی فعل کا واقعہ کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے ۔اس واقعہ سے میڈیا اہلکار میں کافی غصہ ہے۔ تاہم واقعہ کی سنگینی بھانپتے ہوئے ریاستی حکومت نے فوری کاروائی میں سہارنپور کے جی آر پی سرکل افسر اس واقعہ کی جانچ کی ہدایت دی ہے ساتھ اس میں ملوث جی آر پی اہلکار راکیش کمار، اسیٹیش ہاوس افسر اور کانسٹیبل سنیل کمار کو معطل کردیا ہے۔

وہیں ریاست کے مختلف حصوں خاص کر شاملی میں میڈیا اہلکار نے اس واقعہ کے خلاف احتجاج کیا اور ایف آئی آر درج کر کے قصواروں جی آر پی نوجوانوں کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close