بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

جھارکھنڈ میں کس کی بنے گی سرکار..؟ فیصلہ کل

سب سے پہلے ہوگی پوسٹل بیلٹ کی گنتی......... چندن کیاری اور تورپا کے نتائج سب سے پہلے آنے کی امید

جھارکھنڈ اسمبلی انتخابات کی ووٹوں کی گنتی 23 دسمبر کی صبح 8 بجے سے شروع ہوگی۔ ایک گھنٹے بعد ووٹوں کی گنتی کا پہلا رجحان صبح نو بجے سے ملنے لگے گا۔ تمام راؤنڈ میں امیدواروں کو ملے ووٹوں کا اعلان لاؤڈ اسپیکرز کے ذریعہ کیا جائے گا۔ تورپا اور چندنکیاری میں سب سے کم 13.13 راؤنڈ کی گنتی ہوگی اور چترا میں سب سے زیادہ 28 راؤنڈ میں۔ لہٰذا سب سے پہلے تورپا اور چندن کیاری کے نتائج آنے کی امید ہے اور سب سے بعد میں چترا کے نتائج آنے کی امید ہے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق، ریاست کے تمام ضلع کوارٹر پر ووٹوں کی گنتی ہوگی۔ سب سے پہلے پوسٹل بیلٹ کی گنتی ہوگی۔ اس پر کیوآر کوڈ ہوتا ہے، جس کا ملاپ کرتے ہوئے پہلے اسکین کیا جائے گا۔ پھر گنتی شروع ہوگی۔ اس کے بعد ای وی ایم کے ووٹوں کی گنتی شروع ہوگی۔ ووٹوں کی گنتی کے دن اضلاع میں سیکورٹی انتظامات سخت رہیں گے۔ مجسٹریٹ کے ساتھ پولیس فورس کی تعیناتی رکھی جائے گی۔ ووٹوں کی گنتی والی جگہوں میں سیاسی جماعتوں کے ایجنٹ ضلع انتظامیہ کے ذریعہ دیئے گئے پاس سے ہی داخل ہو سکتے ہیں۔

کاؤنٹنگ ایجنٹ بغیر پاس کے اندر داخل نہیں ہو سکتے ہیں۔ کاؤنٹنگ ہال میں داخل ہونے سے پہلے میٹل ڈیٹکٹر سے جانچ کی جائے گی۔ اس کے بعد ہال میں سیاسی پارٹیوں کے کاؤنٹنگ ایجنٹ داخل ہو سکتے ہیں۔ صرف سپروائزر ہی اپنا موبائل فون لے جا سکیں گے جبکہ باقی کوئی عہدیدار، کاؤنٹنگ اہلکار یا کاؤنٹنگ ایجنٹ موبائل فون نہیں لے جا سکتے۔ اس کے علاوہ نشہ آور اشیاء سمیت دیگر قابل اعتراض سامان اندر لے جانے پر مکمل طور پر پابندی ہے۔

ہر راؤنڈ کی رپورٹ فائنل ہونے کے بعد دوسرے راؤنڈ کی گنتی شروع ہوگی۔ ہر کاؤنٹنگ ٹیبل پرکاؤنٹنگ اسسٹنٹ، کاؤنٹنگ سپروائزر اور کاؤنٹنگ مائیکرو آبزرور موجود رہیں گے۔ مختلف پارٹیوں کے ایجنٹ بھی کاؤنٹنگ اور ریٹرننگ آفیسر کے ٹیبل پر رہیں گے۔ پوسٹل بیلٹ کی گنتی کے وقت ایککاؤنٹنگ اسسٹنٹ بڑھ جائے گا۔

وی وی پیٹ سے ملانے کے بعد حتمی نتیجے:
وی وی پیٹ سے ملانے کے بعد ہی آخری نتیجے جاری ہوں گے۔ آخری راؤنڈ کی گنتی کے بعد متعلقہ اسمبلی حلقوں کے 5.5 بوتھوں کی رینڈملی جانچ کی جائے گی۔ صحیح نتیجہ آنے کے بعد فائنل رزلٹ جاری کیا جائے گا۔

پانچ مراحل کی ووٹنگ:
واضح ہو کہ پانچ مراحل میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں پہلے مرحلے کے لئے 30 نومبر کو ووٹ ڈالے گئے، جس میں 13 سیٹوں پر 64.12 فیصد ووٹنگ ہوئی۔ دوسرے مرحلے میں 7 دسمبر کو 19 سیٹوں پر ووٹنگ ہوئی اور 65.85 فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ تیسرے مرحلے میں 12 دسمبر کو 17 سیٹوں پر 62.58 فیصد پولنگ ہوئی۔ وہیں چوتھے مرحلے میں 16 دسمبر کو 15 سیٹوں پر 63.55 فیصد اور پانچویں اور آخری مرحلے میں جمعہ کو 16 سیٹوں پر 70.83 فیصد پولنگ ہوئی۔

اس کے ساتھ ہی تمام 81 سیٹوں پر پانچ مراحل میں ووٹنگ کا عمل مکمل ہوگیا۔ اب سب کی نظریں 23 دسبر کو ہونے والی ووٹوں کی گنتی پرمرکوز ہیں۔ مجموعی طور پر جھارکھنڈ میں اسمبلی انتخابات پر امن رہے۔ تقریبا ً ڈیڑھ ماہ چلے انتخابات میں کہیں کوئی ناخوشگوار واقعہ نہیں پیش آیا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close