بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

جھارکھنڈ: انڈین مسلم لیگ کے ریاستی صدر سید امجد علی کا انتقال

بہار کے گیا ضلع کے رہنے والے سید امجد علی کا انتقال ہوگیا۔ وہ انڈین یونین مسلم لیگ کے جھاکھنڈ کے صدر تھے اور کسی زمانے میں وزیر اعظم چندر شیکھر کے نزدیکی سمجھے جاتے تھے۔ انہیں گردے کی تکلیف کے باعث رانچی کے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا اور ان کا ڈائلیسس ہو رہا تھا لیکن آج سہ پہر تین بجے ان کا 77سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ سید امجد علی نامور صحافی اور روزنامہ سچ کی آواز کے سی ای او اور ایڈیٹر ان چیف سید فیصل علی کے چچا تھے اور ان سے خاص تعلق رکھتے تھے۔ وہ نامور اسلامی دانشور اور ادیب سید ریاست علی کے چوتھے بیٹے تھے۔

آپ کی پوری زندگی سماجی خدمات میں صرف ہوئی۔ جھارکھنڈ کی سیاسی سرگرمیوں میں ہمیشہ پیش پیش رہے اور سماجی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ 1977میں جنتا پارٹی کے دور میں انہیں رانچی کے بیتیا اسمبلی کا ٹکٹ ملا لیکن انہوں نے پرچہ نامزدگی داخل نہیں کیا جس کے نتیجے میں سبودھ کانت سہائے کو ٹکٹ مل گیا اور وہ جیت کر کامیاب ہوئے۔ سید امجد علی کافی عرصہ تک ایچ ای سی سے وابستہ رہے بعد میں انہوں نے وی آر ایس لیا اور لوگوں کی خدمات کو اپنی زندگی کا مقصد بنا لیا۔ وہ این ایل او کے جنرل سکریٹری بنائے گئے اور انہوں نے ایک بہت کامیاب اور ایماندار کارکن کی حیثیت سے اپنی شناخت قائم کی۔ سید امجد علی اس کے علاوہ آل انڈیا علما بورڈ کے صدر بھی رہ چکے ہیں۔

بہار کے سابق وزیر اعلیٰ ستیندر بابو سے بھی قریبی تعلق رہا ستیندر بابو نے اپنی سوانحہ حیات میں اس بات کا ذکر کیا ہےکہ کس طرح سید امجد علی نے جنتا پارٹی کی جانب سے ملنے والے ٹکٹ پر انکار کر دیا تھا۔ اس کے بعد سید امجد علی نے آل انڈیا مسلم لیگ جوائنٹ کرلی اور آخر وقت تک اسی سے وابستہ رہے۔ سید امجد علی کو آج رات رانچی کے ڈورانڈا میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ ان کے وارثین میں تین بیٹیاں اور اہلیہ ہیں۔ سید امجد علی نے اپنی پوری زندگی سماجی خدمات میں لگا دی۔ ان کا تعلق حضرت مینا مشہدی ؒکے خاندان سے تھا۔ وہ ہمیشہ غریبوں کی مدد کیلئے پیش پیش رہتے تھے اور انہوں نے سماجی خدمات سے کبھی منھ نہیں موڑا۔ ان کے انتقال سے جو خلا پیدا ہوا ہے اس کی بھرپائی مشکل لگتی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close