اپنا دیشتازہ ترین خبریں

جموں و کشمیر: محکمہ بجلی کےعارضی ملازمین کا انوکھا احتجاج، نیم برہنہ ہوکر دیادھرنا

جموں و کشمیر کی سرمائی دارالحکومت جموں میں بقایا اجرتوں اور ملازمت مستقلی کے مطالبات کے حق میں محکمہ بجلی کے عارضی ملازمین نے جمعہ کے روز نیم برہنہ ہو کر احتجاجی مظاہرہ کیا اور حکومت کے خلاف زبردست نعرے بازی کی۔

جے اینڈ کے کیجول لیبرز یو نین پاور ڈولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے بینر تلے بدھ کے روز سینکڑوں کی تعداد میں محکمہ بجلی کے نیڈبیسڈاور کیجول ملازمین نے محکمہ بجلی کے چیف انجینئر دفتر جموں کے سامنے شدت کی سردی میں نیم برہنہ ہو کر دھرنا دیا اور اپنے مطالبات کے حق نعرے بازی کی۔ اس دوران احتجاجی ملازمین نے ‘ہماری مانگیں پوری کرو، پوری کرو’ نعرے بلند کئے۔ یونین کے صدر اکھل شرما نے بتایا کہ ہم بقایا اجرتوں کی ادائیگی اورملازمت مستقلی کے مطالبات کے حق میں گزشتہ کئی دنوں سے چیف انجینئر دفتر پی ڈی ڈی کے سامنے احتجا جی مظاہرہ کررہے لیکن بڑے افسوس کی بات ہے کہ ابھی تک ریاستی حکومت نے ہمارے مسائل کا ازالہ کرنے کے کیلئے کوئی اقدام نہیں کئے۔

انہوں نے کہا کہ جموں کے عارضی ملازمین کے ساتھ ہمیشہ امتیازی سلوک روا رکھا جاتا ہے، جموں کے عارضی ملازمین بقایا اجرتوں اور ملازمت مستقلی کے مطالبات کے حق میں سراپا احتجاج ہیں لیکن حکومت نے صوبہ کشمیر میں ایس آر او 381 لاگو کر کے 2012 تک کے عارضی ملازمین کی ملازمت کو باقاعدہ بنایا۔ انہوں نے کہا ایک ہی ریاست میں الگ الگ قانون کیوں لاگو کئے جاتے ہیں، اگر کشمیر میں ایس آر او 381لاگو کر وہاں کے عارضی ملازمین کو مستقل کیا گیا توجموں کے ملازمین کو ایس آر او 381 سے باہر کیوں رکھا گیا. انہوں نے کہا کہ جب تک ہمارے مطالبات پورا نہیں کئے گئے ہم چیف انجینئر دفتر کے دھرنے پر بیٹھے رہیں گے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close