اپنا دیشتازہ ترین خبریں

جمعیۃ علما ہند کے نائب صدر مولانا امان اللہ قاسمی کا انتقال

کوکن کے معروف عالم دین کو جمعیۃ نے پیش کی خراج عقیدت

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
جمعیۃ علماء ہند کے نائب صدر اور کوکن کے معروف عالم دین مولانا امان اللہ قاسمی کا آج مختصر علالت کے بعد انتقال ہو گیا۔ وہ 68 برس کے تھے۔ ایک ہفتہ سے بخار کے عارضہ میں مبتلا تھے، ہفتہ کی صبح چیمبور ممبئی کے ایک اسپتال میں علاج کے دوران زندگی کی آخری سانس لی۔ مرحوم قدیم دینی و علمی درسگاہ دار العلوم حسینیہ شری وردھن ضلع رائے گڑھ ( مہاراشٹرا) کے مہتمم بھی تھے۔

مولانا امان اللہ قاسمی کے سانحہ ارتحال پر جمعیۃ علماء ہند کے صدر مولانا قاری سید محمد عثمان منصور پوری اور جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے قلبی رنج والم کا اظہارکرتے ہوئے اسے جمعیۃ علماء ہند کے حلقے کیلئے خصوصا اور دینی و مذہی دائرہ میں عموما موت العالمَ کا مصداق قرار دیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ مرحوم کی شخصیت اس نازک زمانہ میں آپ اپنی مثال تھی، ان کی زندگی خدمت خلق اور قربانیوں کی مرقع تھی۔ وہ انتہائی متواضع اور خلیق انسان تھے۔ سال گزشتہ سانگلی و کولہا پور سیلاب سے تباہ حال افراد کی امداد میں پیش پیش تھے۔ اسی طرح نسرگ طوفان متاثرین کی امداد و راحت رسانی میںعین علالت سے قبل تک مصروف تھے۔جمعیۃ علماء ہند کی خدمت ان کی حیات عزیز کا محبوب مشغلہ تھا۔ جمعیۃ علماء ہند کے اکابر سے ان کو اور ان کے خاندان کو ہمیشہ لگاؤ رہا۔ ان کے والد محترم حضرت عبدالرحیم بروڈ رحمتہ اللہ علیہ، قطب عالم شیخ لاسلام حضرت مولانا سید حسین احمد مدنی نوراللہ مرقدہ کے مجاز و بیعت تھے اور ان کے نام پر کوکن میں دارالعلوم حسینیہ کی بنیاد رکھی جس کے چشمہ فیض سے پورا خطہ کوکن سیراب ہو رہا ہے۔ حضرت مولانا امان اللہ قاسمی اسی ادارے کے مہتمم تھے۔ ان کے دور اہتمام میں دار العلوم حسینہ میں تعلیمی، تدریسی اور تعمیری ترقی ہوئی۔

صدر جمعیۃ علماء ہند اور جنرل سکریٹری نے مولانا مرحوم کی وفات کو باعث صد حسرت اور ملک و ملت کا عظیم نقصان بتاتے ہوئے تمام پسماندگان بالخصوص صاحبزادہ مولانا اسجد و دیگر کی خدمت میں دہلی ہمدردی و تعزیت مسنونہ پیش کی ہے اور دعاگو ہیں کہ اللہ تعالی مولانا مرحوم کو جنات عدن میں مقام اعلی عطا فرمائے۔ انھوں نے جملہ جماعتی احباب و متعلقین و ائمہ مساجد سے پرخلوص اپیل کی ہے کہ مولانا مرحوم کے لیے دعائے مغفرت و ایصال ثواب کا اہتمام کریں۔

انھوں نے ابتدائی تعلیم ڈھابیل گجرات میں حاصل کی 1978 میں دارالعلوم دیوبند سے فارغ ہوئے، اس کے بعد تعلیم اور خدمت خلق کو مقصد حیات بنایا۔ جمعیۃ علماء ہند کے حلقے میں لگاتار یہ دوسرا صدمہ ہے، ابھی دو روز قبل مفتی خیر الاسلام (نائب صدر جمعیۃ علماء ہند) کا انتقال ہوا اور اب دوسرے نائب صدر مولانا امان اللہ قاسمی رحلت فرما گئے، یہ دونوں حضرات ایک ساتھ 2017 میں جمعیۃ علماء ہند کے اجلاس مجلس منتظمہ بمقام نئی دہلی نائب صدر منتخب ہوئے تھے۔ اس سے قبل گزشتہ ماہ مولانا عبدالحق آنند (سابق صدر جمعیۃ علماء گجرات) اور مولانا حسام الدین (سابق صدر جمعیۃ علماء مغربی بنگال) نے داعی اجل کو لبیک کہا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close