تازہ ترین خبریںدلی نامہ

جامعہ ملیہ اسلامیہ میں یونانی دوا سازوں کی ایسوسی ایشن کا جشن ’اُڈما‘ کا انعقاد

نئی دہلی (انورحسین جعفری)
یونانی ڈرگز مینوفیکچر ایسوسی ایشن (اُڈما) اور وزارت آیوش (حکومت ہند) کے اشتراک سے دوسرا ’جشن اُڈما‘ جامعہ ملیہ اسلامیہ کے انصاری آڈیٹوریم میں منعقد کی گئی۔ جس میں بہت سے ماہرین نے شرکت کی۔ جشن اڈما کی افتتاحی تقریب کا آغاز حکیم خبیب بقائی کی تلاوت کلام الہی اور حکیم اعجاز احمد اعجازی کے ترجمے کے ساتھ ہوا۔

اس موقع پر مہمان خصوصی کے طور پر جے ایم آئی کی وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر نے شرکت کی، جبکہ مہمان ذی وقار سینٹرل وقف کونسل کے رکن محمد رئیس خان پٹھان نے شرکت کی۔ مہماں خصوصی پروفیسر نجمہ نے اُڈما کے ذمہ داران کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ یونانی وآیوروید ادویات کے فروغ کیلئے یہ اہم قدم ہے۔ پروفیسر نجمہ نے کہاکہ مختلف اداروں سے وابستہ حکیموں اور ڈاکٹروں کی موجودگی سے نئے بچے یہاں سے بہت کچھ سیکھ کر جائیں گے، نیز ہیلتھ میلہ کامیاب ہوگا۔

سی سی آر یو ایم کے ڈائریکٹر جنرل پروفیسر عاصم علی نے اُڈما کے ممبران و منتظمین کو مبارکباد پیش کی اور سی سی آر یو ایم کی جانب سے طب یونانی کے فروغ کیلئے کئے گئے اقدامات کا ذکر کیا۔ آیوروید وزارت آیوش کے ایڈوائزر ڈاکٹر ڈی سی قٹوچ نے قیام اُڈما پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ آج اُڈما کی دوسری سالگرہ منائی جا رہی ہے، اُڈما کے سرپرستوں کی کارکردگی اور مسلسل پیش رفت اطمینان بخش اور قابل تعریف ہے۔

ایڈوائزر، یونانی، وزارت آیوش ڈاکٹر محمد طاہر نے اُڈما کے ذمہ داران و ممبران کو سرگرم عمل ہونے کی ترغیب دی اور حکومتی سطح سے ہر ممکن تعاون دینے کی یقین دہانی کرائی۔ اسسٹنٹ ڈرگز کنٹرولر ڈاکٹر خالد احمد نے اس جشن کی افادیت پر روشنی ڈالی۔ اُڈما کے صدر حامد احمد نے مہمانان کا تعارف کرایا اور اُڈما کے بینر تلے کئے جا رہے کاموں کا احاطہ کیا، ساتھ ہی مسٹر حامد نے سہ روزہ جشن اُڈما کے اغراض ومقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایاکہ آج سے وزارت آیوش کے بینر تلے یہ جشن اُڈما کی تقاریب کا آغاز ہوگیا ہے، جس میں کانفرنس، ورکشاپ، علمی وفنی لیکچرز، بحث ومباحثہ ہوں گے، نیز جامعہ کے وسیع میدان میں آیوش ہیلتھ میلہ لگا ہوا ہے، سبھی سے اپیل ہے کہ بڑی تعداد میں لوگ یہاں آئیں اور ہیلتھ میلہ سے فیض حاصل کریں۔

اس دوران اُڈما کی جانب سے مہمانان کے ہاتھوں بی یو ایم ایس میں شاندار صلاحیت کا مظاہر کرنے والی تین طالبات جن میں اول ڈاکٹر مومنہ خاتون صدیقی (20ہزار روپئے نقداور ایوارڈ)، دوئم ڈاکٹر سعدیہ ادریس (15ہزار روپئے اور ایوارڈ) نیزسوئم آرزو کوثر (10ہزار روپئے وایوارڈ) دے کر ان کی عزت افزائی کی گئی، وہیں ورلڈ یونانی فاؤنڈیشن کی جانب سے مسیح الملک حکیم اجمل خان ؒ کے پڑپوتے ڈاکٹر ساجد نثار خان (جودھپور) کو ان کی طبی خدمات کے اعتراف میں حکیم الیاس دہلوی، ’نشان طب ایوارڈ‘ سے نوازا گیا۔ اس موقع پرحکیم عزیر احمد بقائی، شفیق بھائی سمیت مختلف دوا ساز کمپنیوں کے نمائندے اور حکیم موجود تھے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close