اپنا دیشتازہ ترین خبریں

تین طلاق ختم کرنا حکومت کی اولین ترجیح

پارلیمنٹ کی مشترکہ اجلاس میں صدر کووند کا خطاب

صدر رام ناتھ کووند نے آج خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک قرار دیتے ہوئے ممبران پارلیمنٹ سے طلاق بدعت (تین طلاق) اور نکاح حلالہ کو ختم کرانے میں تعاون کی اپیل کی۔

مسٹر کووند نے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کو بااختیار بنانے کی حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک ہے۔ انہوں نے کہا، "حکومت کی یہ سوچ ہے کہ نہ صرف خواتین کی ترقی ہو، بلکہ خواتین کی قیادت میں ترقی ہو۔خواتین کی حفاظت کو اولین ترجیح دیتے ہوئے ریاستوں کے تعاون سے کئی مؤثر قدم اٹھائے گئے ہیں۔صدر نے ملک میں ہر بہن بیٹی کے لئے مساوی حقوق کو یقینی بنانے کے لئے ‘تین طلاق’ اور ‘نکاح-حلالہ’ کے خاتمے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا، "میں تمام ارکان سے درخواست کروں گا کہ ہماری بہنوں اور بیٹیوں کی زندگی کو اور قابل احترام اور بہتر بنانے والی ان کوششوں میں اپنا تعاون دیں۔ ”

انہوں نے خواتین کے خلاف جرائم کی سزا زیادہ سخت بنائے جانے اور سزا کی نئی دفعات کو سختی سے نافذ کئے جانے جیسے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ‘بیٹی- بچاؤ، بیٹی-پڑھاو’ مہم سے رحم مادر میں بچوں کے قتل میں کمی آئی ہے اور ملک کے کئی اضلاع میں صنفی تناسب میں بہتری آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ‘اجولا یوجنا ‘ سے دھوئیں سے نجات، ‘مشن اندردھنوش’ کے ذریعے ٹیکہ کاری، ‘سوبھاگیہ’ اسکیم کے تحت مفت بجلی کنکشن کا سب سے زیادہ فائدہ گاوں کی خواتین کو ملا ہے۔ دیہی علاقے میں ‘پردھان منتری آواس یوجنا ‘ کے تحت بنے گھروں کی رجسٹری میں بھی خواتین کو ترجیح دی جا رہی ہے۔ اس اسکیم میں اگلے تین برسوں کے دوران گاؤں میں تقریبا دو کروڑ نئے گھر بنائے جائیں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close