اپنا دیشتازہ ترین خبریں

تمل ناڈو میں بارش کا قہر: کئی مکان منہدم، 10 خواتین سمیت 17 افراد ہلاک

تمل ناڈو میں کویمبٹور کے نادور گاؤں میں شدید بارش کی وجہ سے پیر کو تین مکان منہدم ہوگئے، جس کی وجہ سے کم ازکم 17افراد کی موت ہوگئی۔ پولیس ہیڈ کوارٹر سے موصول اطلاع کے مطابق ہلاک شدگان میں 10خواتین اور دو بچے شامل ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ ہلاک شدگان میں ایک ہی کنبے کے چار اراکین بھی شامل ہیں۔

حادثے کی اطلاع ملنے پر پولیس فائربریگیڈ اور راحت اور بچاؤ اہلکاروں کے ساتھ محکمہ محصولات کے افسر بھی موقع پر پہنچ گئے ہیں۔ حادثہ پیر کی صبح ساڑھے پانچ بجے ہوا تھا جب سابھی اپنے گھروں میں سورہے تھے۔ محکمہ محصولات کے افسر نے کہا شدید بارش کی وجہ سے ایک کمپاؤنڈ کی دیوار منہدم ہوگئی جس سے تین مکان متصل تھے جس کی وجہ سے یہ حادثہ پیش آیا۔ حادثے کی جگہ پر راحت اوربچاؤ مہم جاری ہے۔ لاشیں ملبے سے نکالی جاچکی ہیں اور انہیں پوسٹ مارٹم کےلئے میٹو پلایم سرکاری اسپتال بھیج دیا گیا ہے۔

وزیراعلی ای پلانی سامی نے اس حادثے پر تعزیت کا اظہار کیا ہے اور ہلاک شدگان کے گھروالوں کو ریاستی آفات راحت فنڈ سے چار چار لاکھ روپے کی امدادی رقم دینے کا اعلان کیا ہے۔ ہلاک شدگان کی شناخت گرو، رام ناتھ، آنند کمار، ہری سدا، شیوکامی، اووی آمل، ناتھیا، ویدہی، تلگواتی، اروکنی، رکمنی، نیویدا، چنمل، اکشیا اور لوکورم کے طور پر ہوئی ہے۔ مشرق کی سمت سے ہوائیں چلنے کی وجہ سے تمل ناڈو کے مختلف علاقوں میں شدید بارش ہوئی ہے۔

ریاست کے پہاڑی ضلع نیل گری ،ایروڈ اور پڑوسی جنوبی ضلعوں میں شدید بارش ہونے کی وجہ سے سیلاب کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔ نیل گری ضلع کے کنور میں آج صبح ساڑھے آٹھ بجے تک پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 133.8ملی میٹر بارش ہوئی ہے، جبکہ نامکل میں 64ملی میٹر اور اودگ منگلم میں 56.2ملی میٹر بارش درج کی گئی ہے۔ وہیں چنئی شہر اور اس کے مضافاتی علاقے ننگم بکم میں آج صبح ساڑھے آٹھ بجے تک 4.7سینٹی میٹر بارش ہوئی ہے، جبکہ مینم بکم میں چھ سینٹی میٹر بارش درج کی گئی ہے۔

محکمہ موسمیات نے بتایا کہ اگلے دودن تک شدید بارش ہونے کا اندازہ ہے۔ بحیرہ عرب کے جنوبی مغربی علاقے اور سرحدی بحر ہند میں ہوا کا کم دباؤ بنا ہوا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close