تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

ترکی سے 3500 شامی پناہ گزینوں کی وطن واپسی: رپورٹ

نئے سال کے آغاز سے اب تک 3500 سے زیادہ شامی پناہ گزیں کسپ چیک پوائنٹ کے راستے ترکی سے وطن واپس لو ٹ چکے ہيں۔ شامی مائیگریشن حکام کے حوالے سے میڈیا رپورٹ میں یہ اطلاع دی گئی ہے۔

ترک صدر رجب طیب اردوگان نے جنوری میں کہا تھا کہ ترکی نے یوروپی یونین کے ساتھ معاہدے کے تحت 40 لاکھ شامی پناہ گزینوں کی میزبانی کرنے میں 35 ارب ڈالر خرچ کیا ہے۔ رواں سال کے آغاز سے اب تک شام کے صوبہ لاتکیہ کی سرحد پر واقع کسپ چیک پوائنٹ کے راستے سے 3610 شامی پناہ گزیں ترکی سے وطن واپس لوٹے ہيں۔ شامی رزنامہ الوطن نے ذرائع کے حوالے سے ایک رپورٹ میں کہا کہ گزشتہ 327 پناہ گزیں ترکی سے وطن واپس لوٹے ہیں، جبکہ روزانہ 20 سے 30 افراد آرہے ہيں۔

ذرائع نے بتایا کہ وطن واپس لوٹنے والے شامی پناہ گزینوں کی تعداد روز بروز بڑھتی جارہی ہے۔ شام میں 2011 سے خانہ جنگی چل رہی ہے، جہاں 2017 میں دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (داعش) کے خلاف کا میابی کا اعلان کیا گیا تھا۔ شام میں جنگ بندی کے لئے ترکی، روس اور ایران ضمانت کار کا رول ادا کر رہے ہيں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close