تازہ ترین خبریںدلی نامہ

بی جے پی 10-10 کروڑ کا لالچ دے کر ہمارے اراکین اسمبلی خریدنا چاہتی ہے

دہلی کے نائب وزیراعلی منیش سسودیا کا بی جے پی پر الزام، اپنے دم پر لڑے بی جے پی

نئی دہلی(انور حسین جعفری)
دہلی کے نائب وزیر اعلی اور عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر منیش سسودیا نے آج بی جے پی پر ’آپ‘ کے اراکین اسمبلی خریدنے کی کوشش کا الزام لگایا ہے۔ پارٹی دفتر میں منعقدہ پریس کانفرنس میں منیش سسودیا نے کہاکہ بی جے پی 10-10 کروڑ روپے کا لالچ دیکر عام آدمی پارٹی کے ممبران اسمبلی کو خریدنے کی کو شش کر رہی ہے۔

نائب وزیرا علی منیش سسودیا نے کہاکہ بی جے پی کو لگنے لگا ہے کہ اس کے پاس الیکشن لڑنے کےلئے اب کوئی ایشو نہیں ہے تو اب بی جے پی نے ایک نئی چال شروع کی ہے کہ عام آدمی پارٹی کے اراکین اسمبلی کو خریدا جائے اور وہ ہمارے اراکین اسمبلی کو خرید کر الیکشن لڑنا چاہتی ہے۔ بی جے پی کی کوشش ہے کہ 12 تاریخ سے قبل عام آدمی پارٹی کے اراکین اسمبلی بی جے پی میں شامل ہوجائیں۔ اسلئے بی جے پی نے ہمارے 7 اراکین اسمبلی سے رابطہ کیا اور ان لوگوں کو دس دس کروڑ روپے کی پیش کش کی ہے کہ الیکشن سے قبل بی جے پی میں شامل ہو جائیں۔ ہمارے ان ساتوں اراکین نے اس کی پوری تفصیل ہمیں بتائی کہ بی جے پی میں کس نے بات کی اور کتنی رقم دینے کا لالچ دیا گیا۔

منیش سسودیا نے یہ بھی کہاکہ میں بی جے پی ،نریندر مودی اور امت شاہ کو کہنا چاہتا ہوں کہ وہ ہمارے اراکین اسمبلی کو خرید کر الیکشن لڑنے کی کوشش نہ کریں بلکہ اگر ان میں دم ہے تو اپنے ایشو زپر لڑیں۔ منیش سسودیا نے کہا بی جے پی نے پہلے بھی ہمارے اراکین اسمبلی کو خریدنے کی کوشش کی تھی۔ کارپوریشن کے الیکشن میں وہ ایک بار کامیاب بھی ہوئے، لیکن بوانہ کے الیکشن نے بی جے پی کو سبق سکھا دیا تھا جو سب نے دیکھا تھا۔ انھوں نے کہاکہ اگر بی جے پی کے پاس ملک کو بدلنے کا کوئی ایجنڈہ ہے تو اس پر وہ الیکشن لڑے۔ سسودیا نے کہاکہ جب ہماری 49 دنوں کی حکومت بنی تو تب بھی بی جے پی نے یہی حرکت کی تھی۔ میں کہنا چاہتا ہوں کہ مودی جی آپ نے پانچ سال میں اگر عام آدمی کے لئے کچھ کیا ہو توبتاکر الیکشن لڑو۔ آپ کی اس سازش کو ہم اور عوام کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

دہلی کے کنوینر گوپال رائے نے کہاکہ بی جے پی نے ارکین اسمبلی کو خریدنے کی جو مہم چلائی ہے اس سے صاف ظاہر ہے کہ دہلی میں بی جے پی کے ساتوں امیدوار بری طرح ہار رہے ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close