اپنا دیشتازہ ترین خبریں

بی جے پی کا یہ ہے راج، خواتین پر گری گاج: کانگریس

کانگریس نے اترپردیش کے ہاپوڑ میں عصمت دری کے واقعہ کو انتہائی شرمناک بتاتے ہوئے الزام لگایا کہ بی جے پی کی اقتدار والی ریاستوں میں خواتین کے ساتھ عصمت دری کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے اور وزیراعظم نریندر مودی کو اس ناکامی کی ذمہ داری لیتے ہوئے جواب دینا چاہئے۔

کانگریس کے ترجمان جیہ ویر شیرگل نے آج یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں نامہ نگاروں کو بتایا کہ کہ جن ریاستوں میں بی جے پی کی حکومت ہے وہاں خواتین کے ساتھ عصمت دری کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے۔ بی جے پی کی حکومت والی ریاستوں میں خود بی جے پی کے لیڈران اور ممبران اسمبلی اس طرح کے مجرمانہ واقعات میں ملوث ہیں اور وہاں کی بی جے پی حکومتیں انہیں بچانے کی کوشش کر رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سرکاری اعدادو شمار کے مطابق ملک میں پانچ سال کے دوران لڑکیوں کے ساتھ عصمت دری کے واقعات میں 83 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات 34 فیصد بڑھے ہیں۔ حکومت کے اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ صرف اترپردیش میں خواتین کے ساتھ عصمت دری کے واقعات میں 25 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اور ریاست میں ہر روز تقریباَ آٹھ خواتین کے ساتھ عصمت دری ہو رہی ہے۔ یوگی ادیتیہ ناتھ حکومت میں خواتین کے ساتھ جرم اور عصمت دری کے واقعات روکنے میں ناکام ثابت ہو رہی ہے۔

ترجمان نے کہا کہ ہاپوڑ کا واقعہ انتہائی شرمناک ہے۔ متاثرہ لڑکی صرف بیس سال کی ہے اور وہ بیوہ ہے۔ اس کے ساتھ چودہ مرتبہ اجتماعی عصمت دری ہوئی۔ اس نے پولیس میں شکایت درج کرائی لیکن پولیس نے اسے بھگا دیا یہاں تک کہ پولیس کے اعلی افسران نے بھی اس کی بات نہیں سنی۔ بالآخر اس نے خودکشی کی کوشش کی اور وہ اسی فیصد جل گئی ہے۔ دہلی کے ایک اسپتال میں داخل ہے۔ اس خاتون کا کہنا ہے کہ عصمت دری سے بچنے کے لئے اس نے یہ قدم اٹھایا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close