اپنا دیشتازہ ترین خبریں

بی جے پی نے پانچ ممبران اسمبلی کو ٹکٹ نہیں دیا، مقابلے والے حلقوں میں امیدواروں کے ناموں کا اب تک اعلان نہیں

مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات کے لئے آج بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے جانب سے اعلان کردہ 17 امیدواروں کی دوسری فہرست میں پانچ موجودہ ایم ایل اے کو امیدوار
نہیں بنایا گیا ہے۔

ایک وزیر شرد جین کے حلقہ سمیت سات حلقوں میں پرانے امیدواروں پر ہی اعتماد کیا گیا ہے۔ وہیں سخت مقابلہ والی اندور کی سبھی سیٹیں، بھوپال کی گووند پورا، ہوشنگ آباد کی سیونی۔مالوہ اور ودیشا کی شمس آباد پر بھی تذبذب کی کیفیت برقرار ہے۔ پارٹی نے سابق وزیر انوپ مشرا کو گوالیار کے بھتروار سے امیدوار بنایا گیاہے۔ مسٹر مشرا سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کے بھانجے ہیں۔ کل 17 امیدواروں میں سے دو خواتین ہیں۔

آج جاری کی گئی فہرست میں بچھیا، ملتائی، کروائی ، شجالپور اور بڑنگر حلقوں میں پارٹی نےنئے چہروں کو موقع دیا ہے۔ بجاور، انوپ پور، جبل پور شمال، نواس، بیاورا، پیٹ لاود اور اجین جنوب پر پارٹی نے موجودہ ممبران اسمبلی کو ہی دوبارہ موقع دیا ہے۔ پارٹی کی دوسری فہرست میں بھی گووندپورہ اور سیونی۔مالوہ کا نام نہیں ہے۔ ان دونوں حلقہ انتخاب پر بالترتیب بابولال گوڑ اور سرتاج سنگھ دعویدار ہیں۔ پارٹی کے یہ دونوں سینئر ایم ایل اے دو سال قبل وزیر کے عہدے سے ہٹادیئے گئے تھے۔

قبل ازیں پارٹی نے 176 امیدواروں کی فہرست جاری کی تھی۔ ان میں سے ایک امیدوار کا آج صبح انتقال ہوگیا۔ کانگریس اب تک 171 حلقوں میں اپنے امیدواروں کا اعلان کرچکی ہے۔ مدھیہ پردیش میں کاغذات نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ 9 نومبر ہے

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close