تازہ ترین خبریںدلی نامہ

بجلی بلوں میں راحت

گھریلو بجلی کنکش پر فکس چارج کیا کم، 105 سے 750روپے تک بل میں آئے گی کمی......پانچویں سال بھی نہیں ہونے دی بجلی مہنگی: وزیر اعلی کجریوال

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
بجلی میٹر پر فکس چارج بڑھانے کا الزام جھیل رہی عام آدمی پارٹی کی دہلی حکومت کی جانب سے دہلی والوں کو فکس چارج میں بڑی راحت دی گئی ہے۔ دہلی حکومت کی ہدایات پر بجلی کے ریگولیٹری کمیشن (ڈی ای آر سی) نے مقررہ چارج کو کم کردیا ہے۔ اس سے گھریلو بجلی صارفین کا بجلی بل ہر ماہ 105 سے 750 روپے کم ہوجائے گا۔

کجریوال حکومت کی جانب سے رہائشی بجلی کے بل پرفکس چارج میں بڑی کمی کرتے ہوئے 15 کلو واٹ تک استعمال والے گھریلو صارفین پر فکس چارج 75 روپے سے 105 روپے فی کلوواٹ تک گھٹا دیا ہے۔ دہلی میں گھریلو بجلی کنکشن پر فکس چارج 75 روپے سے لے کر 105 روپے فی کلو واٹ تک ہے۔لیکن اب دہلی والوں کو سستا فکس چارج ہی ادا کرنا ہوگا، یہ نئی شرحیں یکم اگست سے لاگو ہوں گی۔ لیکن یونٹ سلیب کی شرح میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔

اس سلسلے میں دہلی کے وزیر اروند کجریوال نے ٹویٹ کرکے دہلی والوں کو مبارک باد بھی پیش کی ہے۔ کجریوال نے کہا مبارک ہو دہلی! مسلسل پانچویں سال بھی بجلی کے ریٹوں میں کوئی اضافہ نہیں۔ بلکہ اس کے برعکس مسلسل پانچویں سال بھی بجلی کی شرحوں میں کمی کی گئی ہے۔ اب دہلی میں بجلی کے دام ملک میں سب سے کم ہیں اور ہندوستان میں دہلی واحد ایسی جگہ ہے جہاں دن میں 24 گھنٹے بجلی دستیاب ہوتی ہے۔

دہلی حکومت کی جانب سے فکس چارج کم کرنے کے بعد اب ہر ماہ دو کلو واٹ کے بجلی کنکشن پر ہر ماہ 125 روپے فی کلو واٹ کے بجائے محض 20 روپے فکس چارج دینا پڑے گا۔ 2 سے 5کلو واٹٹ تک اب 140 روپے فی کلو واٹ کے بجائے 50 کلو واٹ ہی فکس چارج دینا ہوگا۔ 5 سے 15 کلو واٹ تک کو فی مہینہ 175 روپے فی کلو واٹ کی جگہ اب صرف 100 روپے فکس چارج دینا ہو گا۔ وہیں حکومت نے ماہر نفسیات اور فزیوتھیروپسٹوں کو بھی گھریلو زمرے کا فائدہ دیا ہے اب فیزیو تھیروپسٹ اور ماہر نفسیات کی کلینک بھی گھریوں کنکش کے زمرے میں آئے گی۔ آلودگی کو دھیان میں رکھنے کے علاوہ بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کے فروغ کیلئے چارجنگ اسٹیشنوں کو ریلیف فراہم کرنے کے علاوہ مشروم کاشت کاروں کیلئے بھی کمی کر دی گئی ہے۔

یکم اگست سے نافذ ہونے والے نئے ٹیرف کی شرح 2019-20 میں پاور یونٹ کے سلیب ریٹ میں اضافہ نہیں کیا ہے۔ تاہم جو لوگ 1200 یونٹ سے زیادہ خرچ کرتے ہیں انہیں 25 پیسے زیادہ ادا کرنا پڑے گا۔ یہاں یہ بھی بتا دیں کہ پچھلے سال مارچ میں دہلی میں فکسس میں اضافہ کیا گیا تھا۔ جس کی سیاسی جماعتیں مستقل مخالفت کر رہی تھیں۔ ریاستی کانگریس نے دعویٰ کیا کہ فکس چارج کی آڑ میں دہلی حکومت نے بجلی کمپنیوں کو 5 ہزار کروڑ کا منافع دیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ گذشتہ سال مارچ کے مہینے میں، ڈی ای آر سی نے گرمیوں کے آغاز کے ساتھ ہی فکس چارج کو ڈھائی سے چھ اعشاریہ چھ گنا تک بڑھا دیا تھا۔ اگرچہ اس سال کی کمی ظاہر کی جا رہی ہے، لیکن پچھلے سال فکس چارج صرف 20 روپے ہی تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close