اپنا دیشتازہ ترین خبریں

بارہمولہ میں انکاؤنٹر، ایک جنگجو اور ایک ایس پی او کی موت

جموں و کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں بدھ کے روز جنگجوؤں اور سکیورٹی فورسز کے مابین ہونے والے ایک تصادم میں لشکر طیبہ کا ایک جنگجو ہلاک اور ایک خصوصی پولیس افسر (ایس او پی) کی بھی موت ہوگئی۔ مرکزی حکومت کی جانب سے 5 اگست سے دفعہ 370 اور 35 اے کو غیر مؤثر کرنے کے بعد وادی میں یہ پہلا تصادم ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق جنگجوؤں کے چھپے ہونے کی خفیہ اطلاع کے پیش نظر منگل کی شب پرانا بارہمولہ شہر میں ریاستی پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ (ایس او جی)، فوج اور سنٹرل ریزرو پولیس فورس نے ایک مشترکہ محاصرہ اور سرچ آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ صبح جب سکیورٹی فورسز جب جنگجوؤں کی طرف بڑھ رہے تھے تو جنگجوؤں نے خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند فائرنگ شروع کردی۔ سکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی کے بعد انکاؤنٹر کا آغاز ہوا۔

انہوں نے بتایا کہ انکاؤنٹر میں ایک دہشت گرد ہلاک ہوگیا جبکہ دو ایس او پیز زخمی ہوگئے۔ زخمی اہلکاروں کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں دوران علاج ایک افسر نے دم توڑ دیا۔ اس افسر کا نام بلال احمد بتایا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جنگجوؤں کی لاش کے پاس سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کرلیا گیا ہے۔ جنگجو کی شناخت ایم گوجر کے نام سے ہوئی ہے، وہ ایل ای ٹی کا رکن ہے اور گذشتہ دو سال سے بارہمولہ میں سرگرم تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close