تازہ ترین خبریںدلی نامہ

ایک مرتبہ پھر حج کمیٹی کے ذریعہ حج پر جانے والوں کی حق تلفی کی کوشش

تقریباً 5ہزار سے زیادہ سیٹیں مرکزی اقلیتی وزارت پی ٹی اوز کو دیئے جانے کی فراق میں

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
حج مشن 2019 کا عمل شروع ہو چکا ہے۔ مرکزی وزارت اقلیتی امور اور حج کمیٹی آف انڈیا کی ہدایات کے مطابق تمام ریاستی حج کمیٹیوں میں عازمین حج کی روانگی کےلئے سلسلہ وار کاروائی جاری ہے۔ لیکن ایک مرتبہ پھر مرکزی وزارت اقلیتی امور کی جانب سے حج کمیٹی آف انڈیا کے ذریعہ حج پر روانہ ہونے والے ہندوستانی عازمین کی حق تلفی کئے جانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

ذرائع کی اطلاع کے مطابق مرکزی وزارت اقلیتی امور کی جانب سے گزشتہ سال بڑھا ہوا 5ہزار سیٹوں کا پورا کا پورا کوٹہ پرائیویٹ ٹور آپریٹرس کو دیئے جانے کے بعد اس برس حج کوٹے میں اضافہ 20692 کے کوٹہ میں سے بھی مزید تقریباً 5ہزار سے زیادہ سیٹیں مرکزی وزارت اقلیتی امور پی ٹی اوز کو دیئے جانے کی فراق میں ہے۔ جس کےلئے کاروائی شروع ہو گئی ہے۔ باوثوق ذرائع کی اطلاع کے مطابق 5اپریل کو پہلی ویٹنگ لسٹ کے پیسے جمع ہونے کے بعد اور دوسری ویٹنگ لسٹ جاری ہونے سے قبل مرکزی وزارت اقلیتی امور کی جانب سے اس برس پرنس محمد بن سلمان کی جانب سے دیئے گئے 20692 سیٹوں کے اضافی حج کوٹے میں سے محض 15 ہزار سیٹیں ہی ریاستی حج کمیٹیوں میں تقسیم کی جائیں گی۔ جو اس بات کو واضح کرتا ہے کہ مرکزی اقلیتی وزارت اضافی کوٹے میں سے 5ہزار سے زیادہ سیٹیں پی ٹی اوز کو دی جانے کی تیاری کر رہی ہے۔

غور طلب ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد نے اپنے حالیہ دورۂ ہند میں ہندوستانی مسلمانوں کو تحفہ دیتے ہوئے 20692 سیٹوں کا ہندوستانی حج کوٹے میں اضافہ کیا تھا۔ جس کے بعد ہندوستانی حج کوٹہ 1لاکھ 75ہزار 25 سے بڑھ کر ایک لاکھ 95ہزار 692 ہوگیا۔ اس سے قبل بھی گزشتہ برس 5000 سیٹوں کا حج کوٹے میں اضافہ کیا گیا تھا۔ جس میں سے 3ہزار سیٹوں کا کوٹہ حج کمیٹی آف انڈیا کو دیا گیا تھا اور بقایا پی ٹی اوز کو دیا گیا تھا۔ لیکن اس برس حج مشن کا آغاز ہوتے ہی اور کوٹہ بڑھنے سے قبل ہی کوٹے کی تقسیم کرتے ہوئے مرکزی اقلیتی وزارت نے گزشتہ سال کا بڑھا ہوا پانچ ہزار سیٹوں کا پورا کوٹہ پی ٹی اوز کی جھولی میں ڈال دیا، جس کے بعد پی ٹی اوز کا حج کوٹہ 50ہزار ہو گیا ہے۔ جبکہ حج کمیٹی آف انڈیا کو ایک لاکھ 25ہزار 25سیٹیں دی گئی تھیں۔

اب جبکہ سعودی ولی عہد نے ہندوستانی مسلمانوں کو تحفہ دیتے ہوئے 20692 سیٹوں کا حج کوٹہ میں اضافہ کیا ہے تو اس پر مرکزی اقلیتی وزارت اور پی ٹی اوز کی نظر لگی ہے۔ جبکہ یہ بات بھی سب پر عیاں ہے کہ پی ٹی اوز ایک سیٹ کا ساڑھے تین لاکھ اور ساڑھے چار لاکھ سے پانچ لاکھ تک عازمین سے وصول کرتے ہیں، اس کے باوجود بھی مرکزی وزارت اقلیتی امور پی ٹی اوز کو مزید سیٹیں دینے جا رہی ہے۔ جبکہ اضافی کوٹے کی تمام سیٹیوں کی حقدار حج کمیٹی ہے۔ کیوں کہ حج کمیٹی سے حج بیت اللہ پر جانے کےلئے درخواست دینے والوں کی تعداد حج کمیٹی کے کوٹے سے کئی گنا زیادہ ہے اور کوٹہ کم ہے۔ ان میں دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی سرفہرست ہے، یہاں حج کوٹے سے تین، چارگنا زیادہ لوگ حج درخواست دیتے ہیں۔ جبکہ کوٹہ مختصر ہے۔ اب جبکہ مرکزی وزارت اقلیتی امور حج مشن 2019کے آغاز کے ساتھ ہی گزشتہ سال بڑھی ہوئی تمام سیٹیں پی ٹی اوز کو سونپ چکی ہے اور حج کمیٹی کے پاس سال 2017 کے برابر کا ہی 1لاکھ 25ہزار 25 کا کوٹہ ہی بچا ہے، ایسے میں جب اضافی کوٹہ ملا ہے تو وہ حج کمیٹی کو ہی ملنا چاہئے، لیکن اس کے باوجود بھی پی ٹی اوز کو پانچ ہزار سیٹیں دی جاتی ہیں یہ نہ صرف پی ٹی اوز اور متعلقہ مرکزی وزارت کے رشتوں پر سوالیہ نشان ہوگا بلکہ حج کمیٹی کی حق تلفی بھی ہوگی، جہاں ہزاروں افراد ویٹنگ لسٹ میں اپنے نام آنے کا انتظار کر رہے ہیں اور اضافی کوٹے سے ان کو حج کی سعادت کی امیدیں وابستہ ہیں۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close