اپنا دیشتازہ ترین خبریں

این پی آر نوٹیفکیشن کے خلاف عرضی پر مرکز سے جواب طلب

سپریم کورٹ نے قومی آبادی رجسٹر (این پی آر) کے نوٹیفکیشن کو چیلنج کرنے والی ایک عرضی پر مرکزی حکومت کو جمعہ کے روز نوٹس جاری کیا۔

چیف جسٹس ایس اے بوبڈے، جسٹس بی آر گوئی اور جسٹس سوریہ کانت کی بینچ نے اسرارالحق منڈل اور دیگر کی عرضی پر مرکزی حکومت سے جواب طلب کیا ہے۔ عرضی گزار نے این پی آر کو نافذ کرنے کے سلسلے میں وزارت داخلہ کی جانب سے 31 جولائی 2019 کو جاری نوٹیفکیشن کی آئینی حیثیت کو چیلنج کیا ہے۔ این پی آر کا عمل یکم اپریل سےشروع ہونے والا ہے۔ عرضی گزار نے شہریت ترمیمی قانون (سی اےاے) کو بھی چیلنج کیا ہے۔

غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ میں سی اےا ے کے خلاف دائر 60 عرضی گزاروں پر پہلے ہی حکومت کو نوٹس جاری کیا جا چکا ہے۔ ان عرضیوں پر 22 جنوری کو شنوائی ہونی ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close