بہار- جھارکھنڈتازہ ترین خبریں

ایس پی۔بی ایس پی کے اتحاد سے ہوگا مودی اقتدار کا خاتمہ: تیجسوی

راشٹریہ جنتادل (آر جے ڈی) کے سینئر لیڈر تیجسوی یادو نے پیرکو کہا کہ اترپردیش میں سماجوادی پارٹی(ایس پی) اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کا اتحاد ملک میں موجود غیر اعلانیہ ایمرجنسی جیسے حالات کو ختم کرنے میں معاون ہوگا۔

ایس پی سربراہ اکھلیش یادو کے ساتھ یہاں صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر یادو نے کہا کہ مرکزکی تاناشاہ بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) حکومت کو شکست فاش دینے کے لئے ایس پی اور بی ایس پی نے تمام گلے شکوے بھلا کر اتحاد کا مظاہرہ کیا جو قابل تعریف ہے انہیں کامل یقین ہے کہ یہ اتحاد بی جے پی کا مکمل طور سے صفایا کرنے میں معاون ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ محترمہ مایاوتی اور مسٹر اکھلیش یادو نے جو قدم اٹھایا ہے اس پر مبارک باد دینے کے لئے وہ بہار کی راجدھانی پٹنہ سے چل کر آئے ہیں۔ کانگریس کے بغیر ایس پی اور بی ایس پی وزیر اعظم نریندر مودی کی پارٹی کو ہرانے کی طاقت رکھتے ہیں حال ہی میں ہوئے ضمنی انتخاب کے نتائج اس کی واضح مثال ہیں۔ تیجسوی نے کہا کہ ملک میں غیر اعلانیہ ایمرجنسی جیسا ماحول ہے۔ آئین اداروں کا غلط استعمال کیا جارہا ہے۔ کسان، نوجوان پریشان ہیں۔ سی بی آئی اور ای ڈی اب ایجنسی نہیں رہ گئے ہیں۔ حقیقت میں یہ بی جے پی اتحاد کے شراکت دار ہوگئے ہیں۔ آر جے ڈی سربراہ لال پرساد یادو آج صرف اس لئے جیل میں ہیں کیونکہ وزیراعظم نریندر مودی انہیں ایک بڑا خطرہ محسوس کرتے ہیں۔

بہار کے سابق نائب وزیر اعلی نے کہا کہ بی جے پی کا اصلی چہرہ ملک کے عوام کے سامنے اجاگر ہوچکا ہے۔ نتیجتا آنے والے وقت میں اترپردیش کے علاوہ بہار اور جھارکھنڈ سے بھی بی جے پی کا صفایا یقینی ہے آنے والے عام انتخابات میں اس اتحاد کو اکثریت ملے گی۔ اترپردیش اور بہار ایسی ریاستیں ہیں جہاں سے ہوکر ہی مرکز میں اقتدار کا راستہ جاتا ہے۔ اس سے قبل آر جے ڈی لیڈر نے بی ایس پی سربراہ مایاوتی سے ملاقات کی اور انہیں ایس پی سے اتحاد کے لئے مبارک باد پیش کی۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close