تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

ایران کے ساتھ جنگ ​​نہیں چاہتےٹرمپ

ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ ایران کے ساتھ جنگ ​​نہیں چاہتے ہیں بلکہ اس کے اتحادی ایسا چاہتے ہیں ۔
مسٹر ظریف نے این بی سی نشریہ کو دئے گئے ایک انٹرویو میں کہا، ’’مجھے یقین نہیں ہوتا کہ صدر ٹرمپ جنگ چاہتے ہیں ، لیکن میں مانتا ہوں کہ کہ اس کے ارد گرد کے لوگ جنگ چاہتے ہیں‘‘َ۔

گزشتہ ہفتے ایران نے بین الاقوامی ایٹمی معاہدے کے تحت یورینیم کی افزودگی کے لئے طے حد سے تجاوز کردیاہے۔ بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اےای اے) نے اس کی تصدیق بھی کی ہے۔ ایران نے 3.67 فیصد مقررہ حد سے تجاوز کرکے اپنا یورینیم کی افزودگی میں 4.5 فیصدتک اضافہ کرلیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ عمان کی خلیج میں گزشتہ ماہ آبنائے ہرمز کے نزدیک دو تیل کے ٹینکروں الٹیئر اور کوکوکا کریجیس میں کے دھماکے کا واقعہ اور ایران کی طرف سے امریکہ کے خفیہ ڈرون طیارہ مار گرانے کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی انتہا پر پہنچ گئی ہے۔
امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے گزشتہ سال مئی میں ایرانی جوہری معاہدے سے اپنے ملک کی علیحدگی کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد سے ہی دونوں ممالک کے درمیان تعلقات انتہائی تلخ ہو گئے ہیں۔ اس ایٹمی معاہدے کے دفعات پر عمل کے بارے میں شک کی صورتحال قائم ہے۔

واضح رہے کہ سال 2015 میں، ایران نے امریکہ، چین، روس، جرمنی، فرانس اور برطانیہ کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے۔ معاہدے کے تحت، ایران نے اس پر لگی اقتصادی پابندیوں کو ختم کرنے کے بدلے اپنے ایٹمی پروگرام کو محدود کرنے پر اتفاق کیا تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close