آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

ایران پر حملے کے وقت کا تعین ہم خود کریں گے: ڈونلڈ ٹرمپ

امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ ایران پر حملہ کب کرنا ہے اس کا فیصلہ وہ خود کریں گے۔ واضح رہے کہ سعودی عرب کی تیل تنصیبات پر حملے کے بعد ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔امریکہ کے انتہائی قدم اٹھاتے ہوئے ایرانی مرکزی بینک پر پابندی عائد کردی ہے۔

ذرائع کے مطابق آسٹریلوی وزیراعظم اسکاٹ موریسن کے ساتھ ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں ٹرمپ نے واضح کیا کہ ایران پر پابندیاں اب تک کی سب سے سخت ترین پابندیاں ہیں۔امریکی صدر نے تہران کو متنبہ کیا کہ واشنگٹن کے پاس دنیا کی مضبوط ترین فوج ہے اور وہ ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ پابندی کا استعمال کر کے تہران کے خلاف دباؤ بڑھانے کا سلسلہ بھیی جاری رکھیں گے۔

پابندیوں کے اعلان کے بعد اور مشترکہ پریس کانفرنس سے قبل ایران کے خلاف فوجی آپشن کے استعمال کے بارے میں نامہ نگاروں سے پوچھے جانے پر ٹرمپ نے کہا ’امریکا ہر کارروائی کے لیے تیار ہے‘۔انہوں نے جاری رکھا ایرانی تقریبا دیوالیہ ہوچکا ہے اور اس کی معاشی صورتحال بہت ابتر ہے۔ٹرمپ نے یہ بھی کہا کہ ایران کے رہنماؤں کو چاہئے کہ وہ اپنے ملک کو بچانے کے لئے دہشت گردی کی حمایت چھوڑ دیں۔

انہوں نے اعلان کیا کہ ان کا ملک اب پہلے سے کہیں زیادہ عسکری طور پر مضبوط ہے۔امریکی وزیر خزانہ اسٹیفن منوچن نے کہا کہ ایران پر حالیہ امریکی پابندیاں "بہت بڑی” ہیں۔ امریکی وزیر نے کہا کہ مرکزی بینک تہران کے لئے فنڈزکا آخری ذریعہ تھا۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close