تازہ ترین خبریںکھیل کھلاڑی

انگلینڈ نے رقم کی تاریخ، 17سال بعد سری لنکا میں سریز پر قبضہ

انگلینڈ نے اسپن تکڑی جیک ليچ، معین علی اور عادل راشد کی زبردست بولنگ کی بدولت سری لنکا کے خلاف دوسرے ٹیسٹ کے پانچویں اور آخری دن اتوار کو صرف 30 منٹ کے کھیل کے بعد 57 رنز سے جیت اپنے نام کرتے ہوئے تین میچوں کی سیریز میں 2-0 سے ناقابل تسخیر برتری اپنے نام کر لی اور اس جیت کے ساتھ ہی انگلینڈ نے 17 سال بعد سری لنکا کی سرزمین پر ٹیسٹ سیریز میں جیت حاصل کی ہے.

انگلینڈ نے سری لنکا کے باقی تین وکٹ 30 منٹ کے اندر نکالتے ہوئے پوری ٹیم کو 74 اوور میں 243 رن پر سمیٹ میچ اور سریز اپنے نام کر لی۔ انگلش ا سپنر ليچ نے آخری سری لنکا بلے باز ملنڈا پشپاكمارا کو کیچ اینڈ بولڈ کیا اور اپنے پانچ وکٹ بھی پورے کر لیے۔ معین نے چار اور عادل نے ایک وکٹ لیا۔ انگلش اسپنر نے میچ میں 20 میں سے 18 وکٹیں حاصل کیں۔

انگلش ٹیم نے سری لنکا کے سامنے دوسری اننگز میں 301 رنز کا ہدف دیا تھا جس کے جواب میں میزبان ٹیم 243 رنز بنا کر آل آؤٹ ہو گئی۔ سری لنکا نے صبح اننگز کا آغاز کل کے سات وکٹ پر 226 رن سے آگے کیا تھا۔ اس وقت بلے باز نروشن ڈكویلا 27 رنز بنا کر کریز پر تھے۔ ڈكویلا نے 43 گیندوں میں تین چوکے لگائے اور 35 رنز بنا کر علی کے ہاتھوں آٹھویں بلے باز کے طور پر آؤٹ ہوئے۔ اس کے بعد سرنگا لکمل کو بھی علی نے دو گیند بعد ہی بولڈ کر کھاتہ بھی کھولنے نہیں دیا اور سری لنکا کا نواں وکٹ گرا دیا۔ ليچ نے پھر پشپاكمارا کو ایک رن پر اپنی گیند پر لپکا اور سری لنکا کی اننگ سمیٹ دی۔

انگلینڈ کی دوسری اننگز میں 124رنز کی سنچری کھیلنے والے کپتان جو روٹ مین آف دی میچ بنے۔ سال 2015-16 میں جنوبی افریقہ کو اس کی زمین پر شکست دینے کے بعد یہ انگلینڈ کی غیر ملکی زمین پر پہلی ٹسٹ سیریز جیت ہے جبکہ روٹ کی کپتانی میں بیرون ملک میں پہلی جیت ہے۔ دنیا میں تیسرے نمبر کی ٹیم انگلینڈ نے اسی کے ساتھ موجودہ نمبر ایک ہندستانی ٹیسٹ ٹیم کو بھی سرفہرست جگہ کیلئے چیلنج دے دیا ہے۔ روٹ نے میچ کے بعد اپنی ٹیم کی تعریف کرتے ہوئے ٹیسٹ میچ کو دلچسپ اور چیلنجنگ بتایا۔ سیریز کا آخری ٹیسٹ کولمبو میں 23 نومبر سے شروع ہو گا۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close