اپنا دیشتازہ ترین خبریں

اناؤ سانحہ: متأثرہ کی حالت ہنوز نازک، نمونیا سے تیز بخار

اترپردیش کے ضلع رائے بریلی میں گذشتہ اتوار کو سڑک حادثے میں شدید طور سے زخمی ہوکر راجدھانی کے کنگ جارج میڈیکل یونیورسٹی(کے جی ایم یو) میں موت و زندگی کی لڑائی لڑ رہی اناؤ ریپ کیس متأثرہ کی حالت ہنوز نازک ہے وہ اب بھی وینٹی لیٹر پر ہیں جبکہ ان کے وکیل کی حالت میں مسلسل بہتری کے آثار دکھائی دے رہے ہیں۔

کے جی ایم یو کی جانب سے جاری ہیلتھ بلیٹن میں ٹراما سنٹر کے انچارج ڈاکٹر سندیپ تیواری نے بتایا کہ متأثرہ اب بھی وینٹی لیٹر پر ہے۔ اسے نمونیا ہوگیا جس کی وجہ سے کافی تیز بخار آ رہا ہے۔ اس کے بلڈ پریشر کو قابو میں کرنے کے لئے دوا دی جا رہی ہے۔ متأثرہ کو ٹیوب کے ذریعہ آکسیجن دی جا رہی ہے۔ اسے ابھی تک ہوش نہیں آیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب کوئی مریض چار دن سے زیادہ وینٹی لیٹر پر رہتا ہے تو اسے آکسیجن دینے کے لئے ٹریکیاس ٹومی طریقہ کا استعمال کیا جاتا ہے اس کے تحت مریض کے گلے میں معمولی آپریشن کرکے ٹیوب کے ذریعہ آکسیجن دی جاتی ہے۔ اس سے مریض کو آکسیجن بھی ملتا ہے اور پھیپھڑوں وغیرہ کی صفائی کرنے میں بھی آسانی ہوتی ہے۔ ڈاکٹروں کی ٹیم 24 گھنٹے مریض کی نگرانی کر رہی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ زخمی وکیل کو وینٹی لیٹر سے ہٹا دیا گیا لیکن ان کی حالت بھی ہنوز نازک ہے۔ ان کے سر میں چوٹ لگی ہے اور ان کو بھی ٹیوب کے ذریعہ آکسیجن دی جا رہی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ 28 جولائی کو رائے بریلی میں سڑک حادثے کا شکار ہونے کے بعد اناؤ ریپ کیس متأثرہ اور اس کے وکیل کو نازک حالت میں ٹراما سنٹر میں علاج کے لئے داخل کرایا گیا تھا۔ اس وقت سے متأثرہ کو وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے جبکہ سنیچر کو وکیل کو وینٹی لیٹر سے ہٹایا گیا ہے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close