اپنا دیشتازہ ترین خبریں

امیدواروں کی قسمت ای وی ایم میں بند

مہاراشٹر میں پولنگ کی رفتار سست، ہریانہ میں چست، ایگزٹ پول کے مطابق دونوں ریاستوں میں بی جے پی کی واپسی کے امکانات

ممبئی؍چنڈی گڑھ (پی این این)
مہاراشٹر اسمبلی کی 288 اور ہریانہ اسمبلی کی 90سیٹوں کیلئے پر امن پولنگ ہوئی ہے۔تھانے میں بی ایس پی لیڈر سنیل کھامبے نے ووٹنگ کے دوران ای وی ایم پر رنگ پھینک دیااور ای وی ایم مرد آباد کے نعرے لگائے پولیس انہیں گرفتار کر لیا۔ حالانکہ مہاراشٹر میں امیدواروں کے حامیوں کے درمیان ٹکرائو بھی ہوا۔ این سی پی حامی ایک امیدوار کی کار جلادی گئی ، اس کے علاوہ ممبئی میں بارش کی وجہ سے پولنگ شرح بھی کم ہوئی ہے۔ پولنگ کی کمی پر مجلس اتحا المسلمین کے سربرال اویسی نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ ادھر ہریانہ میں نوح میں کانگریس امیدوار اور بی جے پی امیدواروں کے حامیوں کے درمیان ٹکرائو ہوا جسے پولیس نے کنٹرول کر لیا۔

الیکشن کمیشن کے مطابق مہاراشٹر میں شام 6بجے تک 60.5فیصد ووٹنگ ہوئی اور جبکہ ہریانہ میں 65فیصد ووٹنگ ہوئی ۔ یہ شرح بڑھ بھی سکتی ہے۔ سب سے زیادہ ووٹنگ ممبئی سٹی میں ہوئی جو 65فیصد تھی۔مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ دیوندر فڑ نویس نے ناگپور میں ووٹ دیا۔ممبئی میں فلمی ستاروں نے ووٹنگ میں زبردست حصہ لیا۔ شاہ رخ خان، عامر خان، سلمان خان اور معروف اداکاروں نے ووٹ ڈالے۔ پونے میں 102سالہ حاجی ابراہیم بھی ووٹ ڈالنے پہنچے ،حاجی ابراہیم چار دنوں سے اسپتال میں داخل تھے وہ خصوصی طور پر ایمبولنس سے ووٹ ڈالنے آئے۔

مہاراشٹر میں مسلمانوں نےکثیر تعداد میں ووٹ دئے ۔ادھر بی جے پی کے گرداس پور سے ایم پی سنی دیول نے جوہو ممبئی میں ووٹ دیا،بچن خاندانے بھی ووٹنگ میں حصہ لیا۔شبانہ اعظمی بھی اپنے شوہر جاوید اختر کے ساتھ ووٹ دینے پہنچی ۔ مجموعی طور پر مہاراشٹر ووٹنگ کی رفتار انتہائی سست رہی ، اس کی بڑی وجہ بارش بتائی گئی۔جبکہ ہریانہ میں ووٹنگ کے دوران کافی جوش دکھائی دیا۔این سی پی کے سربراہ شرد پوار نے بھی ووٹ دیا۔ شیو سینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے اپنے خاندان کے ساتھ ووٹ دیا۔

بہر حال مہاراشٹر ہریانہ اسمبلی انتخابات اور کئی ریاستوں میں ہوئے ضمنی انتخابات کے بعد سبھی امیدواروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگئی ہے۔24اکتوبر کو ووٹوں کی گنتی ہوگی۔اس درمیان ای وی ایم مشینوں کو سخت سیکورٹی میں رکھا گیا ہے اور سیاسی پارٹیوں کے امیدوار ای وی ایم پر نگاہ رکھ رہے ہیں۔

دریں اثنا مہاراشٹر اور ہریانہ میں ووٹنگ کے بعد ایگزٹ پول میں دعوی کیا جارہا ہے کہ مہاراشٹر میں بی جے پی اور شیو سینا گٹھ بندھن ،کانگریس این سی پی کو زبردست ٹکر دے رہا ہے جبکہ ہریانہ میں بی جے پی کا سیدھا مقابلہ کانگریس سے ہے۔ ایگزٹ پول کے مطابق ہریانہ اور مہاراشٹر میں بی جے پی کی واپسی ہوسکتی ہے۔نیوز ایکس کےمطابق مہاراشٹر میں 74سے 89سیٹیں غیر بی جے پی کو مل سکتی ہیں ۔بقیہ این ڈی اے کو 188 سے 200سیٹیں حاصل ہوسکتی ہیں۔

اے بی پی نیوز کے مطاق این ڈی اے کو 204سیٹیں اور یو پی اے کو 69سیٹیں مل سکتی ہیں۔جبکہ ہریانہ میںبی جے پی کو 75سے80سیٹیں ملنے کے آثا ر ہیں۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close