آئینۂ عالمتازہ ترین خبریں

اقوام متحدہ نے حمزہ بن لادن پر رکھا 10لاکھ ڈالر کا انعام

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے دہشت گرد تنظیم القاعدہ سے متعلق افراد، گروپوں، کاروباروں اور اداروں پر پابندی عائد کرنے والی فہرست میں اسامہ بن لادن کے بیٹے حمزہ بن لادن کا نام بھی شامل کر لیا ہے۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی جانب سے جمعہ کو جاری ایک نوٹس میں کہا گیا کہ ’’کمیٹی نے حمزہ بن لادن کو فہرست میں شامل کرنے کی منظوری دے دی ہے ساتھ ہی اس کے اثاثوں پر قبضہ کرنے، سفر پر پابندی اور ہتھیاروں کے خرید فروخت پر روک لگا دی ہے‘‘۔ نوٹس سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ حمزہ بن لادن کو موجودہ القاعدہ سربراہ ایمن الظواہری کے جانشین کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

کمیٹی نے کہا’’ حمزہ بن لادن کو القاعدہ کے اندر ایک سے زیادہ اہم ذمہ داری دی گئی ہے اور اسے اپنے خطرات کا سامنا کرنے کی صلاحیت ہے۔ القاعدہ کے حامیوں کے درمیان حمزہ کی مقبولیت بڑھ رہی ہے اور وہ القاعدہ کی نئی نسل کا سب سے غالب جانشین بن گیا ہے‘‘۔ دوسری جانب امریکہ نے القاعدہ کے سربراہ حمزہ بن لادن کے ٹھکانے کی معلومات دینے والوں کو 10لاکھ امریکی ڈالر کا انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔

وزارت کی جانب سے جمعرات کو جاری ریلیز کے مطابق’’القاعدہ کے سربراہ حمزہ بن لادن کے کسی بھی ملک میں شناخت یا مقام کی معلومات دینے والوں کو امریکی وزارت خارجہ جسٹس پروگرام کے تحت 10 لاکھ امریکی ڈالر تک کا انعام دے گا‘‘۔ حمزہ بن لادن القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن لادن کا بیٹا ہے اور وہ تنظیم کے سربراہ کے طور پر غلبہ قائم کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close