تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

افغانستان کے نائب صدر عبدالرشید دوستم پر قاتلانہ حملہ، بال بال بچے

افغانستان کے نائب صدر عبدالرشید دوستم آج افغانستان کے شمال میں اس وقت طالبان کے ایک قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے جب ان کا قافلہ بلخ سے جوزان ‎جارہا تھا۔ یہ اطلاع دوستم کے ایک قریبی معاون نے دی۔

اس معاون نے بتایا کہ دوستم حملے میں زخمی نہیں ہوئے۔ ذرائع کے مطابق اس حملے میں ملک کے پہلے صدر کا ایک محافظ ہلاک جبکہ دو دیگر زخمی ہو گئے۔ مسٹر دوستم جنہوں نےچیف ایکزکٹیو عبداللہ عبداللہ کی انتخابی ٹیم میں شمولیت اختیار کی ہے، سنیچر کی سہ پہر کو بیرون ملک کے دورہ سے بلخ واپس آئے تھے۔ انہوں نے بلخ میں ایک جلسہ میں کہا تھا کہ اگر انہیں موقع دیا گیا تو وہ چھ مہینے میں شمال سے طالبان کا صفایا کردیں گے۔

پچھلی جولائی میں خودساختہ جلاوطنی ختم کرکے وطن واپس لوٹنے والے ازبک جنگی رہنما جنرل دوستم پر یہ دوسرا قاتلانہ حملہ ہے۔ طالبان نے ایک بیان میں حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے اور کہا ہے کہ اس حملے میں چار محافظ ہلاک اور چھ دیگر زخمی ہوگئے۔

 

 

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close