تازہ ترین خبریںدلی نامہ

اسکیم کا نفاذ مذہبی بنیاد پر نہیں بلکہ زمرے کے مطابق ہونا چاہئے: میناکشی لیکھی

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
نئی دہلی سے رکن پارلیمنٹ میناکشی لیکھی نے آج کہاکہ یہ ملک مذہب کی بنیاد پر نہیں بنا ہے، کسی بھی اسکیم کو مذہب کی بنیاد پر نافذ کرنا غلط ہے، اسکیم کا نفاذ مذہبی بنیاد پر نہیں بلکہ زمرے کے مطابق ہونا چاہئے۔ مذہب سے ہٹ کر اگر اسکیم تیار کی جائیں گی تو اس سے سب کا فائدہ ہوگا۔جیسے ’مدرا لون‘ اور 10فیصد اعلی ذات ریزرویشن ہے اس کا ہر مذہب کے معاشی، اقتصادی طور پر کمزور لوگوں کو فائدہ ملے گا۔ شخصیت ایسی ہونی چاہئے جو سب کو ساتھ لیکر چلے۔

بی جے پی کی رکن پارلیمنٹ میناکشی لیکھی آج اپنی رہائش گاہ پر اردو صحافیوں سے ملاقات کے دوران اپنے خیالات کا اظہار کر رہی تھیں۔ مسلمانوں کی پسماندگی پر میناکشی لیکھی نے کہاکہ مسلمانوں کو پسماندہ بتانا سچ نہیں ہے، یہ امیر، غریب اور وسطی زمرے میں ہیں۔ میناکشی لیکھی نے کہاکہ میرا ماننا ہے کہ کسی کے بھی ساتھ امتیاز نہیں ہونا چاہئے، آزاد ہندوستان میں امتیازی الفاظ کا استعمال بھی نہیں ہونا چاہئے۔ میں اس کو ختم کرنے کے حق میں ہوں۔

میناکشی لیکھی نے اپنے پارلیمانی حلقہ میں کئے گئے ترقیاتی کاموں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہاکہ جس دن سے سیٹ پر آئی اسی دن سے کام شروع کر دیا۔ ایک ایم پی کو 5کروڑ رو پے سالانہ کے حساب سے پانچ سال کے 25 کروڑ روپے ترقیاتی کاموں کےلئے ملتے ہیں، لیکن ہم نے اس سے زیادہ پانچ سال میں 32کروڑ روپے ترقیاتی کاموں پر لگائے ہیں، وہ اس طرح کے 7کروڑ روپے جو سابق ایم پی کے بچے ہوئے تھے اور کھاتے میں تھے، وہ بھی ہم نے پارلیمانی حلقہ کی ترقی پر خرچ کئے۔ ان میں ریلوے، سی پی ڈبلیو ڈی، ڈی ڈی اے، این ڈی ایم سی، دہلی کینٹ سے جو پیسہ ترقیاتی کاموں پر لگایا وہ شامل نہیں ہے، اگر اس کو بھی جوڑا جائے تو بہت زیادہ ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ مودی حکومت نے جو اسکیم بنائی ان سے ملک بھر میں سب کو برابر فائدہ پہنچایا، ہم جب کام کرتے ہیں تو ہمیں ٹارگیٹ بناکر کام کرنا چاہئے تاکہ اس کا فائدہ سب تک پہنچ سکے۔ لیکھی نے کہاکہ ہم نے پیرا ملٹری فورسیز کے شہید جوانوں کے بچوں کی 12ویں جماعت تک تعلیم کی ذمہ داری لیتے ہوئے لو دھی روڈ پر این ڈی ایم سی کی جگہ میں اسپیشل اسکول پاس کرایا ہے۔ پانی کا مسئلہ حل کرایا، ویسٹ مینجمنٹ کےلئے دہلی کے بڑے مندروں سے جہاں بچے ہوئے پھول اور کھانا ویسٹ ہوتا ہے، اس کی کھاد بناکر پارکوں میں ڈلوانے کا کام کیا ہے تاکہ جمنا ندی گندی ہونے سے بچ سکے اور گندگی اس تک نہ پہنچ سکے۔ انہوں نے کانگریس اور ’آپ‘ کے اتحاد پر کہا کہ ہم نے ہرعلاقہ میں بلا تفریق عوام کےلئے کام کیا ہے اس لئے ان کے اتحاد ہونے یا نہ ہونے سے ہمیں کوئی فرق نہیں پڑتا۔ جس مقصد کےلئے عوام نے ہمیں رکن پارلیمنٹ بنایا ہے اس مقصد کےلئے ہم نے کام کیا ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close