اپنا دیشتازہ ترین خبریں

ادھو ٹھاکرے کے بنگلے پر لکھے گئے نفرت آمیز کلمات

ریاست مہاراشٹر میں جاری سیاسی رقابت کا آج ایک ایسا پہلو سامنے آیا ہے جس میں ریاست کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے کی سرکاری رہائش گاہ’’ورشا‘‘ نامی بنگلے کے کمروں میں ان کے خلاف لکھے گئے نفرت آمیز کلمات کا انکشاف ہوا ہے اس سلسلے میں ایسا اندازہ لگایا جا رہا ہے کہ سابق وزیر اعلی دیوندر فڑنویس کے اہل خانہ اس کے پس پشت ہیں۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق ’’ورشا‘‘ بنگلے کے ایک کمرے میں انگریزی زبان میں کچھ اس قسم کی تحریرلکھی گئی ہے جس کے مطابق’’ ہو از یوٹی……‘‘،’’ یوٹی از مین‘‘ حالانکہ تحریر میں کہیں بھی ادھو ٹھاکرے کا ذکر نہیں کیا گیا ہے لیکن یہ اندازہ لگایا جا رہاہے کہ ’’یو ٹی‘‘ ادھو ٹھاکرے کا مختصر نام ہے اور تحریر کے مطابق ادھو ٹھاکرے کون ہیں؟ نیز ادھو ٹھاکرے برا آدمی ہے۔ اسی طرح کمرے میں دیوندر فڑنویس کی شان میں بھی کئی کلمات تحریر ہیں جس کے مطابق ’’دیوندرفڑنویس از راک‘‘ اور ’’بی جے پی از راک‘‘۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق فی الوقت ورشا بنگلہ سرکاری محکمہ پی ڈبلیو ڈی کی تحویل میں ہے اور اس کی تجدید اور تزئین کاری کا کام جاری ہے۔ نیز سابق وزیر اعلی دیوندر فڑنویس اپنے اہل خانہ کے ہمراہ اسی بنگلے میں قیام پذیر تھے اور مہاراشٹر میں اقتدار میں تبدیلی کے بعد انہیں یہ بنگلہ خالی کرنا پڑاتھا۔ جس کمرے میں وزیر اعلی کے خلاف نفرت آمیز کلمات اور دیوندر فڑنویس کی شان میں لکھے گئے کلمات منظر عام پر آئے ہیں وہ کمرہ دیوندر فڑنویس کی کم سن دختر کے استعمال میں تھا۔

محکمہ پی ڈبلیو ڈی کا کہنا ہے کہ سابق وزیر اعلی کی جانب سے بنگلہ خالی کر دینے کے بعد کسی بھی دوسرے شخص کو بنگلے میں جانے کی اجازت نہیں ہے۔ واضح رہے کہ ریاست کے دونوں سیاست دانوں کے بیچ رسہ کشی جاری ہے حال ہی میں دیوندر فڑنویس کی اہلیہ نے ادھو ٹھاکرے سمیت شیوسینا کے تعلق سے کئی ایک تنقیدی ٹوئیٹر کیے تھے۔

دیوندرفڑنویس فی الوقت شمال ممبئی کے پاش علاقے میں واقع ایک فلیٹ میں رہائش پذیر ہیں اور چند دنوں میں سال نو کے آغاز کے بعد وہ اپوزیشن لیڈر کو دستیاب ہونے والے سرکاری’’ساگر‘‘ نامی بنگلے میں جلد ہی منتقل ہوجائیں گے۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close