تازہ ترین خبریںدلی نامہ

اب ایک ڈریس میں نظر آئیں گے دہلی وقف بورڈ کے ملازمین

دہلی وقف بورڈ نے کیا اسٹاف کیلئے ڈریس کوڈ کا نفاذ، چیئر مین امانت اللہ خان کی ہدایات پر دی گئیں ملازمین کو ڈریس

نئی دہلی (انور حسین جعفری)
دہلی وقف بورڈ میں کام کرنے والے تمام ملازمین اب ایک ہی جیسے ڈریس کو ڈ میں نظر ا ٓئیں گے۔ دہلی وقف بورڈ کے چیئر مین امانت اللہ خان نے دہلی وقف بورڈ میں بہت سی تبدیلیوں کے ساتھ اب یکسانیت کیلئے ملازمین کا ڈریس کوڈ بھی نافذ کر دیا ہے۔ وقف بورڈ کے مرد ملازمین کیلئے سلیٹی کلر کی پینٹ اور سفید شرٹ جبکہ خواتین ملازماؤں کیلئے سلیٹی کلر کی قمیص اور سفید شلوار کا انتخاب کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ دہلی وقف بورڈ کے چیئر مین امانت اللہ خان کی کوششوں سے جہاں دریا گنج میں بچوں کے گھر میں واقع بورڈ کے قدیم دفتر کی تزین کاری کرکے اسے ایک واقعی دفتر بنایا جا رہا ہے، وہیں دہلی وقف بورڈ کے دفتر میں پیشہ ورانہ ماحول تیار کرنے کیلئے یہاں ملازمین کیلئے ڈریس کوڈ کا بھی نفاذ کیا گیا ہے۔ تاکہ بورڈ کے ملازمین ایک کامن ڈریس میں نظر آئیں اور آفس اور آفس سے باہر سائٹ پر جاتے وقت بورڈ عملہ کو پیشہ وارانہ ورک کلچر کا احساس ہو۔ اس کیلئے بورڈ عملہ کو جدید ٹکنالوجی سے لیس کرنے اور ہر طرح کی سہولت مہیا کرانے کی چیئرمین امانت اللہ خان کی جانب سے واضح ہدایات دی گئیں ہیں۔

چیئرمین امانت اللہ خان کی ہدایت اور بورڈ کے رکن حمال اختر کی دلچسپی سے ہر ملازم کو دو۔دو جوڑی ڈریس تقسیم کیں۔ یہ ریڈی میڈ نہیں بلکہ باقائدہ ٹیلر کے ذریعہ سائز کی سلوائی گئی ہیں،اس کیلئے بورڈ کی جانب سے ٹیلر کا بھی انتظام کیا گیا تھا تاکہ بورڈ کا پورا عملہ جلد سے جلد ایک ڈریس میں نظر آئے۔ گزشتہ دنوں وقف بورڈ کے رکن حمال اختر نے عملہ کو ڈریس کا کپڑا تقسیم کرتے ہوئے کہاکہ آپ سب کو ڈریس دی جارہی ہے تاکہ وقف بورڈ کے پیشہ وارانہ ماحول میں اضافہ ہو سکے اور دہلی وقف بورڈ سے باہر بھی عملہ کی پہچان رہے۔ انہوں نے عملہ کو ہدایت دیتے ہوئے کہاکہ ڈریس کوڈ کی پابندی ضروری ہے خلاف ورزی کرنے پر تادیبی کار روائی کی جائے گی۔

در اصل دہلی وقف بورڈ کی ذمہ داری سنبھالنے کے بعد چیئرمین امانت اللہ خان کی کوشش رہی کہ بورڈ کے بارے میں لوگوں کی رائے بدلے اور عوام کے ساتھ ساتھ سرکاری ایجنسیاں بھی دہلی وقف بورڈ کو سنجیدگی سے لیں۔امانت اللہ خان کا کہنا ہے کہ یہ قوم کا ایک بہت اہم ادارہ ہے جس کو اگر احساس ذمہ داری اور امانت داری کے ساتھ چلایا جائے تو بہت سارے مسائل کا حل ممکن ہے اسی لئے میری کوشش یہ ہے کہ وقف جائداد کے بہتر انتظام اور بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کے ساتھ ساتھ دہلی وقف بورڈ سے وابستہ عملہ پیشہ وارانہ ماحول کے ساتھ کام کریں۔ بورڈ آفس میں آنے والے ہر شخص کو خوش گوار تبدیلی کے ساتھ ساتھ یہ احساس ہو کہ وہ ایک ذمہ دارادارہ میں قدم رکھ رہاہے جہاں اس کی درخواست پر سنجیدگی سے غور ہوگا اور اس کی ہر ممکن مدد کی جائے گی۔

اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close