تازہ ترین خبریںمسلم دنیا

آسیہ بی بی کے وکیل کو جان کا خطرہ: چھوڑا پاکستان، حکومت سے کیا تحفظ مہیا کرانے کا مطالبہ

پاکستان کی سپریم کورٹ کے حکم کے بعد بری ہونے والی توہین مذہب کی ملزمہ عیسائی خاتون آسیہ بی بی کے شوہر عاشق مسیح نے حکومت پاکستان سے مذہبی گروپ تحریک لبیک کے ساتھ سمجھوتہ کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے آسیہ کو تحفظ مہیا کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

آسیہ بی بی کے شوہر عاشق مسیح نے برطانیہ، امریکہ اور کینیڈا سے پناہ کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں حکومت کے تحریک لبیک سے معاہدے کے بعد ان کے خاندان کی جان کو شدید خطرہ لاحق ہے۔ اس سے پہلے توہین رسالت کے مقدمے میں سپریم کورٹ سے مسیحی خاتون آسیہ بی بی کو بری کرانے والے وکیل ایڈووکیٹ سیف الملوک ہفتہ کو اپنے خاندان سمیت بیرون ملک روانہ ہو گئے ہیں۔

ایک ویڈیو پیغام میں عاشق مسیح نے کہا ہے کہ انھیں اپنے خاندان کی سلامتی کے بارے میں تشویش ہے۔ ’’میں برطانیہ کے وزیراعظم سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ ہماری مدد کریں اور جہاں تک ممکن ہو ہمیں آزادی دلائیں۔‘‘ انھوں نے برطانیہ کے علاوہ امریکہ اور کینیڈا سے بھی مدد مانگی ہے۔ اس سے پہلے عاشق مسیح نے جرمنی کے خبر رساں ادارے ڈوئچے ویلے کو انٹرویو میں بتایا ک آسیہ بی بی کی بریت کے بعد شروع ہونے والے مظاہروں کو رکوانے کے لیے حکومت اور تحریک لبیک کے مابین معاہدے کے بعد وہ اور ان کا خاندان خوفزدہ ہے۔

ٹیگز
اور دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close